আল্লাহর মহব্বতের উর্দু কবিতা

আল্লাহর মহব্বত নিয়ে

میں ڈھونڈ رہا کہا ہے دربار الہی
محبت میں تیرے دمبدم رکھنا ہے مولی
محبت میں تیرے دمبدم رکھنا ہے مولی
تیرے عشق میں جینا ہے تیرے نام میں مرنا
ہمے تم دوست بنا لے ہمے تم مستی بنانے
ہمارے پیار بنانے ہمارے یار بنالے
লেখক: মুফতী রিজওয়ান রফিকী

সুন্নাত নিয়ে

مومن جو فدا نقش كف پائے نبی ہو
ہو زیر قدم آج بھی عالم کا خزینہ
گر سنت نبوی کی کرے پیروی امت
طوفاں سے نکل جائے گا پھر اسکا سفینہ
লেখক: শাহ হাকিম মুহাম্মাদ আখতার রহ.

মাক্কা-মাদীনার প্রেম নিয়ে

ساحل سے لگے گا کبھی میرا بھی سفینہ
دیکھیں گے کبھی شوق سے مکہ و مدینہ
লেখক: শাহ হাকিম মুহাম্মাদ আখতার রহ.

দ্বীনের রাস্তায় মেহনতের বিনিময় নিয়ে

گو عشق کا موجود ہے ہر دل میں دفینہ
ملتا نہیں لیکن کبھی بے خون و پسینہ
লেখক: শাহ হাকিম মুহাম্মাদ আখতার রহ.

তওবা নিয়ে

اے اشکِ ندامت میں ترے فیض پہ قرباں
برسا ہے جو عاصی پہ یہ رحمت کا خزینہ
লেখক: শাহ হাকিম মুহাম্মাদ আখতার রহ.

میں عاشق مولی ہو مگر عشق نرالا
یہ جملہ جہاں جنکی تجلی سے اجالا
آے یار جگر نور نظر اب تو کہا ہے
دیوانہ تیرا ہو گیا میں میرے خبر لے
اے دوست اگر جاں طلبی جاں بتو بخشم

 

তুমি কেমন মুসলমান?

تو كيسے مسلمان ہوں تو کیسے مسلمان
تیرا نام ہو مسلم ہے مگر کام میں شیطان
تیرا دین ہو اسلام نہ کہو بندہ تو رام رام
تیرا دین ہو اسلام تیرا رب ہو رحمن

রিজওয়ান রফিকী:

রিজিক দেন আল্লাহ

اسباب دنیا تو ہمہ پردے کے مانند
در اصل یہ سب کے فاعل ایک خداوند

রিজওয়ান রফিকী: ৯-৯-২১

تو حکیمی تو عظیمی تو کریمی تو رحیمی
تو نمایندهٔ فضلی تو سزاوار ثنایی
لمن الملک تو گوئے کے سزاوار خدائی
احدا لیس کمثلہ صمدا لیس کفضلہ

আল্লামা ইকবাল রহ.

Check Also

রবের মহিমা

  আচ্ছা মানুষ ভাবছো কভু রবের মহিমা, এই দুনিয়া তারই হাতে ঘুরছে সর্বদা। একই মায়ের …

One comment

  1. shah Aziz media

    Zaja ka allah

Leave a Reply

Your email address will not be published.